خواجہ معین الدین محبوب کوریجہ کی صاحبزادہ حضرت علامہ سید حامد سعید کاظمی کے بارے میں تشویش


خواجہ فرید فاؤنڈیشن تحصیل علی پور کے اجلاس جو زیر صدارت خواجہ معین الدین محبوب کوریجہ سجادہ نشین دربار عالیہ حضرت خواجہ فرید ہوا۔ اجلاس میں متفقہ قرارداد منظور کی گئی جس میں کہا گیا کہ صاحبزادہ حضرت علامہ سید حامد سعید کاظمی کو جھوٹے مقدمہ میں گرفتار کیاگیا ہے اور ایک سال سے زائد ہوگیا ہے کہ اتنے بڑے اور عظیم عالم دین جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہیں۔ قرارداد میں کہا گیا کہ عدالتوں کو صاحبزادہ حضرت علامہ سید حامد سعید کاظمی کو انصاف دینا چاہیے اور فوری رہا کرنا چاہیے اس موقع پر خواجہ معین الدین محبوب کوریجہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بھر کے مشائخ اور علماء کرام اہلسنت میں انتہائی تشویش اور بے چینی پائی جاتی ہے کیونکہ صاحبزادہ حضرت علامہ سید حامد سعید کاظمی کو ایک جھوٹے اور بے بنیاد کیس میں ملوث کردیاگیا ہے اس پر ستم یہ کہ ایک عالم دین کی ضمانت پر رہائی بھی نہیں کی جارہا ہے انہوں نے کہا کہ ہم توقع کرتے ہیں کہ حکومت اس معاملے میں مداخلت کرکے صاحبزادہ حضرت علامہ سید حامد سعید کاظمی کی رہائی کو یقینی بنائے گی۔ انہوں نے خبردار کیا کہ ایسا نہ ہو کہ عوامی تشویش اور بے چینی ملکی احتجاج کا رنگ اختیار کرلے اور حکومت وقت کو مشکلات کاسامناکرنا پڑے۔