جامعہ انوار العلوم کا پندرھواں سال

٭ مورخہ24-23-22اپریل1960ء کو مدرسہ انوار العلوم کا عظیم الشان سالانہ جلسہ دستار فضیلت عام خاص باغ میں منعقد ہوا اور حسب سابق ملک بھر سے جید علماء کرام اور مشائخ عظام نے شرکت فرمائی جن میں حضرت مولانا عبدالمحامد بدایونی قادری کراچی مجاہد ملت صاحبزادہ سید فیض الحسن سجادہ نشین مہار شریف حضرت مولانا عبدالغفور ہزاروی اور حضرت مولانا شاہ عارف اللہ جیسے اکابر شامل تھے اور مشائخ کرام میں شیخ المشائخ حضرت خواجہ نظام الدین تونسوی عمدذ الصالحین حضرت سجادہ نشین بھور شریف اور حضرت پیرستان شاہ جیسے مشائخ بھی جلوہ گر تھے۔


جامعہ انوار العلوم کا اٹھارھواں سال
٭ سولہواں اور سترھواں جلہ بوجوہ پوری شان و شوکت سے نہ ہوسکا البتہ مدرسہ کے قیام کے اٹھارہ سال پورے ہونے پر اٹھارھواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت منعقد کیاگیا جو بتواریخ23-22-21شوال المکرم1380ھ بمطابق9-8-7اپریل1961ء باغ لانگے خان میں زیر سر پرستی حضرت مخدوم شوکت حسین گیلانی انعقاد پذیر ہوا جس میں تقریباً چالیس مشہور و ممتاز علماء اہلسنت نے شرکت فرمائی جن میں استاذ العلماء مولانا ابو البرکات حضرت مولانا محمد عمر نعیمی کراچی حضرت مولانا مفتی احمد یار خان بدایونی حضرت مولانا حامد علی خان مجددی لاہوری مولانا مفتی امین الدین بدایونی کے علاوہ متعدد مشائخ کرام بھی جلوہ افروز ہوئے جن میں حضرت خواجہ محمد فاروق چشتی صابری نظامی کراچی حضرت صاحبزادہ میاں جمیل احمد صاحب شرقپوری جیسے مشاہیر بھی شامل تھے۔ تین شب و روز مسلسل ملتان شہر پر علم و عرفان کی بارش ہوتی رہی آخری اجلاس میں چالیس فارغ التحصیل فضلاء میں چھتیں حاضر الوقت فضلاء اور چودہ قرآ و حفاظ کی دستار بندی ہوئی اور ان کو سندات فراغ عطا کی گئیں۔


انیسویں سال کا شاندار آغاز
٭ الحمد للہ جامعہ انوار العلوم انتہائی کامیابی کیساتھ اٹھارہ سال پورے کرنے کے بعد انیسویں سال میں داخل ہوگیا۔مدرسہ ہذا کاسالانہ جلسہ 31-30-1مارچ یکم اپریل1962ء باغ لانگے خان میں نہایت شان و شوکت کیساتھ زیر سرپرستی حضرت مخدوم المخادیم مخدوم شوکت حسین گیلانی منقدس ہوا جس میں ملک کے طول و عرض سے جلیل القدر علماء کرام اور مشائخ عظام آئے۔ امسال مرکز اور شاخ نمبر1میں طلباء کی مستقل تعداد ایک سو بہتر رہی ان کے علاوہ سنت محدثین کے مطابق اعزازی سند اجارہ حدیث حاصل کرنیوالے قابل و فاضل طلباء بھی تھے جن میں پینتیس مستقل طورپر دورہ حدیث شریف سے فارغ ہوئے۔ انیس طلباء نے عارضی طور پر قرآت و سماعت حدیث کے بعد سند اجارہ حاصل کی ایک طالب علم نے یونیورسٹی کے فاضل فارسی کا امتحان دیا اور اعلی نمبروں میں کامیابی حاصل کی پنتالیس ناظرہ خواں شریک امتحان ہوئے۔


انوار العلوم کا بیسواں سال
٭ 7-6-5اپریل1962ء مطابق 12-11-10ذیعقدہ1382ھ انتہائی شان و شوکت سے مدرسہ ہذا کا بیسواں سالانہ جلسہ باغ لانگے خان میں منعقد ہوا۔ صدارت کے فرائض مخدوم المخادیم حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی نے انجام دیئے جس میں پاکستان بھر کے طول و عرض سے جلیل القدر علماء کرام اور مشائخ عظام اور ہزاریا سامعین نے شرکت فرمائی شب و روز تین دن تک یہ فیض جاری رہا اس جلسے میں ایک سو سے زائد علما و مشائخ نے شرکت فرمائی۔
٭ الحمد للہ ! جامعہ انوار العلوم اپنے تعلیمی و تبلیغی مقاصد میں روز بروز ترقی کرتا رہا۔ تمام دینیہ عربیہ قرآن مجید حفظ و ناظرہ مع تجوید و قرآۃ تفسیر و حدیث و فقہ و اصول میراث صرف و نحو ادب معانی وغیرہ فارسی اردو حساب نیز ابتدائی انگلش کی تعلیم بھی جاری رہی حضرت علامہ سید احمد سعید کاظمی رحمتہ اللہ علیہ شیخ الحدیث و التفسیر کے دریا کے حقائق و معاف سے سیراب ہونے کیلئے دور دراز سے طلباء علوم دینہ حاصل کرنے آتے رہے اور اس طرح اسلام کی تبلیغ ادیان باطلہ کی تردید اور مسلک اہلسنت کی اشاعت پوری سنجیدگی اور قناعت سے ہوتی رہی اور مدرسین اور عملے کی تعداد بھی حسب سابق رہی۔


شعبہ نمبر3مدرسہ جمال العلوم کا جدید اضافہ
٭ اپریل 1963ء سے مدرسہ ہذا کی ایک شہری شاخ جمال العلوم واقع کوٹلہ تولے خان ملتان کا قیام عمل میں آیا اس کا قیام جناب الحاج خواجہ میاں نیاز احمد صاحب نائب صدر مدرسہ ہذا کی عملی و مالی امداد مدرسین کا انتظام کیاگیا مولوی سلطان احمد فاضل انوار العلوم عربی و فارسی حافظ اللہ بخش بہاولنگری معلم قرآن مجید برائے حفظ او رحافظ محمد نوع معلم ناظرہ کے علاوہ ایک امام مسجد کا تعین بھی کیاگیا جنکے تمام تنخواہیں اور اس شاخ پر اٹھنے والے تمام اخراجات مدرسہ کے ذمہ رہے۔ اسی طرح جامع مسجد برابراں کا الحاق بھی مدرسہ سے کردیا گیا اور یہاں کے تمام امور کی ذمہ داری بھی مدرسہ انوار العلوم کے ذمہ رہی۔


جامعہ انوار العلوم کا اکیسواں سال
٭ جامعہ انوار العلوم ملتان کا اکیسواں جلسہ دستار فضیلت مورخہ22-21-20مارچ1964ء بمطابق7-6-5ذیقعد بروز جمعہ ہفتہ اتوار باغ لانگے خان میں نہایت ہی شان و شوکت سے منعقد ہوا سرپرستی کے فرائض مخدوم المخادیم حضرت مخدم سید شوکت حسین گیلانی نے انجام دیئے پاکستان کے طول و عرض سے تقریباً ایک سو جلیل العدر علماء کرام اور مشائخ عظام نے اس جلسے کو رونق بخشی اور ہزاروں سامعین کو اپنے نورانی خطابات سے نوازا آخری اجلاس جائزہ حسن قرآۃ کے لئے خاص تھا جسکی صدارت کمشنر ملتان جناب رفعت پاشا نے کی آخر میں ملک کے نامور نعت خواں طوطی ملتان میاں محمد علی کی وجدآفرین نعت خوانی اور صلوۃ و سلام پر یہ عظیم الشان سہ روزہ جلسہ اختتام پذیر ہوا اس جلسے کے تمام تر انتظامات میں دیگر مخلق کارکنوں کے ساتھ ساتھا حضرت مولانا عبدالقادر صاحب کا نمایاں حصہ رہا۔

٭ الحمد للہ! جامعہ اسلامیہ عربیہ انوار العلوم ملتان شہر کا اکیسواں سال بھی اپنے تعلیمی اور تبلیغی مقاصد میں روز افزوں ترقی سے ہمکنار رہا۔ اس سال بھی تمام ضروری علوم دینیہ عربیہ قرآن مجیدحفظ و ناظرہ تفسیر و حدیث فقہ اصول فقہ اور دیگر علوم مروجہ کا سلسلہ پوری محنت سے جاری رہا دورہ حدیث شریف کی تکمیل سے بھی کافی طلباء مستفید ہوئے۔ اس سال مجموعی طورپر مدرسین و ملازمین کا عملہ تقریبا تیس افراد پر مشتمل رہا اور طلباء کرام کی تعداد میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوا اور ادارہ مالی مشکلات کے باوجود کامیابی و کامرانی کی رہ پر گامزن رہا۔


جامعہ انوار العلوم کا بائیسواں سال
٭ جامعہ انوار العلوم ملتان کا بائیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت مورخہ4-3-2اپریل1965ء بمطابق30-29-ذیعقد یکم ذی الحجہ 1384ھ بروز جمعہ ہفتہ اتوار قاسم باغ قلعہ کہنہ پر نہایت تنزک و احتشام سے منعقد ہواحسب سابق حضرت مخدوم المخادیم حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی رحمتہ اللہ علیہ نے سرپرستی سے نوازا مقامی اور بیرونی علماء کرام اور مشائخ عظام کی کثیر تعداد نے شرکت فرمائی ہر اجلاس میں پچیس فارغ التحصیل فضلا ء انوار العلوم کی دستار بندی کرائی گی۔


جامعہ انوار العلوم کا تیسواں سال
٭ مدرسہ اسلامی عربیہ انوار العلوم ملتان کا تیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت بتاریخ10-9-8اپریل1966ء بمطابق18-17-16ذی الحجہ1385ھ قاسم باغ قلعہ کہنہ پر انتہائی تزک و احتشام سے حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں مقامی علماء مشائخ عظام اور قاریان اور نعت خوانان خوش الحان نے شرکت فرمائی ہر اجلاس میں تقریبا ساٹھ ستر ہزار سامین کا اجتماع ہوتا رہا۔


جامعہ انوار العلوم کا چوبیسواں سال
٭ اس سال بھی جامعہ انوار العلوم کا چوبیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت پوری شان و شوکت سے منعقد کیاگیا۔30-29-28اپریل1967ء بمطابق19-18-17محرم الحرام87ھ بروز جمعہ ہفتہ اتوار قاسم باغ میں منعقد ہونیوالا جلسہ بھی تاریخی نوعیت کا حامل رہا حسب سابق علماء کرام و مشائخ عظام کی تشریف آوری اور ہزاروں سامعین کرام کی شرکت ادارہ ہذا کے کارکنوں کی حوصلہ افزائی کا باعث بنی جلسہ کا انتظام حسب سابق حضرت الحاج مولانا محمد عبدالقادر صاحب جلالپوری اور ان کے باہمت مخلص معاونین نے کیا۔


جامعہ انوار العلوم کا پچیسواں سال
٭ حسب سابق 31مئی یکم دوئم جون1968ء بمطابق5-4-3ربیع الاول1388ھ مدرسہ کا سالانہ جلسہ دستار فضیلت پوری شان و شوکت سے منعقد کیاگیا صدارت کے فرائض حسب سابق مخدوم المخادیم حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی سجادہ نشین دربار عالیہ حضرت پیر موسی پاک شہید رحمتہ اللہ علیہ نے انجام دیئے ملک بھر سے جید علماء کرام اور مشائخ عظام نے اس سہ روزہ اجتماع میں شرکت فرمائی اور ہزاروں سامعین کرام علماء کرام کے بصیرت افروز بیانات سنے اور مشائخ کرام کے نورانی چہروں کی زیارت کی۔


جامعہ انوار العلوم کا چھبیسواں سال
٭ مدرسہ اسلامیہ عربیہ انوار العلوم ملتان کا چھبیسواں سالانہ جلسہ 28-27-26ستمبر1969ء بمطابق 15-14-13رجب المرجب1389ھ کو حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی کی زیر صدارت پوری شان و شوکت سے منعقد کیاگیا جس میں ملک کے نامور خطیب اور شعلہ بیان مقررین نے ہزاروں سامعین کو شب و روز تین دن تک اپنے نورانی بیانات سے نوازا۔حسب سابق اسٹیج سیکریٹری کے فرائض حضرت مولانا محمد عبدالقادر رحمتہ اللہ علیہ جلالپوری نے انجام دیئے جلسہ گاہ کے تمام تر انتظامات حضرت مولانا حافظ محمد قمر الدین اور ان کے رفقاء کار نے انجام دیئے اس سلسلے میں جناب حاجی منظور احمد صاحب قادری مالک ہمدرد پرنٹنگ پریس مولوی محبوب احمد اور مولوی طفیل احمد قادری موصوف کا تعاون بھی ہمارے ساتھ شامل حال رہا۔


جامعہ انوار العلوم کا ستائیسواں سال
٭ اسی طرح ستائیسواں جلسہ دستار فضیلت بھی19-18-17اپریل1970ء بمطابق12-11-10صفر المظفر1390ھ میں حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی کی صدارت میں پوری روایتی سج دھج کیساتھ منعقد کیاگیا اکابرین اہلسنت کا حسین اجتماع اور ہزاروں سامعین کی شرکت نے جلسہ کی رونق میں اضافہ کا باعث رہی۔


جامعہ انوار العلوم کا اٹھائیسواں سال
٭ جامعہ اسلامیہ عربیہ انوار العلوم ملتان کا اٹھائیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت11-10-9اپریل1971ء بمطابق13-12-11صفر المظفر1391ھ و حسب سابق انتہائی شان و شوکت سے منعقد کیاگیا سامعین کا ٹھاٹھیں مارتا ہوا سمندر اور اسٹیج پر جید علماء کرام اور مشائخ عظام کا اجتماع اس جسلے کا بھی امتیازی نشان تھا لیکن انتہائی افسوس کے ساتھ اس حقیقت کا اظہار کرنا پڑ رہا ہے کہ مقامی انتظامیہ نے جلسہ کی اجازت دینے کے بعد بلاوجہ اچانک جلسہ بند کرنیکے کا تحریری حکم دیا جسکی وجہ سے مدرسہ کو زبردست مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا ۔


جامعہ انوار العلوم کا انتیسواں سال
٭ جامعہ انوار العلوم کا انتیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت مورخہ 9-8-7اپریل1972ء بمطابق24-23-22صفر المظفر1392ھ حسب دستور منعقد ہوا حضرت مخدوم سید شوکت حسین گیلانی نے حسب سابق اپنی سرپرستی سے جلسہ کو زینت بخشی اور مسلسل تین دن تک علم و عرفان کی بارش ہوتی رہی۔


جامعہ انوار العلوم کا تیسواں سال
٭ جامعہ انوار العلوم کا تیسواں سالانہ جلسہ دستار فضیلت بھی 1973ء میں حسب روایت پوری شان و شوکت سے منعقد کیا گیا اور ملت اسلامیہ کی کثیر تعداد علماء کرام اور مشائخ عظام کے علمی فیوض و برکات سے مستفید ہوئے۔اس جلسہ دستار فضیلت میں بعض انتظامی دشواریوں کے باعث فضلاء کی دستار بندی نہ ہو سکی۔

          پچھلا صفحہ                                         اگلا صفحہ

ہوم پیج