تعداد رواۃ کے اعتبار سے حدیث کی اقسام

تعداد رواۃ کے اعتبار سے حدیث کی چار قسمیں ہیں

(۱) متواتر: جس کے راوی اول سے آخری تک ہر طبقہ میں اتنے کثیر ہوں  جن کا جھوٹ پر جمع ہونا عادتاً محال ہو۔ ان کی تعداد میں اختلاف  ہے لیکن اس کی شرط یہ ہے کہ حدیث کا تعلق حس اور مشاہدہ سے  ہو۔
(۲) خبر مشہور: وہ ہے جس کے راوی ہر طبقہ میں کم از کم تین ہوں۔
(۳) عزیز : وہ حدیث ہے جس کے ہر طبقہ میں دو راوی پائے جائیں۔
(۴) غریب: وہ حدیث ہے جس کی سند میں ہر جگہ یا کسی ایک جگہ صرف ایک راوی ہو۔ اس کو فرد بھی کہتے ہیں۔ فرد کی دو قسمیں ہے

٭ فرد مطلق ٭ فرد نسبی

فرد مطلق: جس کی سند میں ہر جگہ ایک ہی راوی ہو۔
فرد نسبی: جس کی سند میں بعض جگہ صرف ایک راوی ہو۔ اوصافِ رواۃ کے اعتبار سے حدیث کی تقسیم
صحیح: جس کی سند متصل ہو، اس کے تمام راوی عادل و ضابط ہوں اور اس میں علت قادحہ و شذوذ نہ ہو۔
حسن: جس کی سند میں صحیح کی تمام شرائط پائی جائیں لیکن اس کے راویوں میں  صفت ضبط کم ہو۔ صحیح اور حسن ہر ایک کی دو قسمیں ہیں۔

لذاتہٖ اور لغیرہٖ۔
صحیح لذاتہٖ: جس کی سند متصل ہو اور اس کے رواۃ میں صفات معتبرہ فی الصحیح علی وجہ الکمال پائی جائیں۔
صحیح لغیرہٖ: جس کے راویوں میں صفات مذکورہ کمی کے ساتھ پائی جائیں لیکن طرق متعددہ سے مذکورہ کمی پوری ہو جائے۔
حسن لذاتہٖ: جس کے راویوں میں صفت ضبط ناقص ہو اور اس کمی کو پورا کرنے والا کوئی امر نہ پایا جائے۔
حدیث ضعیف: وہ ہے جس کے رواۃ میں صفات معتبرہ فی الصحیح والحسن سب یا بعض نہ پائی جائیں اور شذوذ یا نکارت یا کسی علت خفیہ کی  وجہ سے اس کے راوی کی مذمت کی گئی ہو۔ اس اعتبار سے اس کی  متعدد اقسام ہیں جو بخوفِ طوالت ذکر نہیں کی گئیں۔

حسن لغیرہٖ: جس حدیث ضعیف کا تدارک تعدد طرق سے ہو جائے۔
شاذو محفوظ: اگر ثقہ راوی کسی ایسے راوی کے خلاف روایت کرے جو اس سے ارجح اور زیادہ ثقہ ہے تو اس حدیث کو شاذ کہیں گے اور اس کے مقابل کو محفوظ
منکر و معروف: اگر ضعیف راوی نے قوی راوی کے خلاف روایت کی تو اس کی  حدیث کو منکر اور اس کے مقابل کو معروف کہتے ہیں۔
متابع: جس حدیث کو کوئی راوی کسی دوسرے راوی کے موافق روایت کرے بشرطیکہ دونوں حدیثیں ایک ہی صحابی کی مسند ہوں تو اس موافق کو متابع اور موافقت کو متابعت کہتے ہیں۔
شاہد: اگر کسی دوسرے صحابی سے ایسی حدیث مروی ہو تو اس کو شاہد کہتے ہیں۔
موضوع: وہ ہے جس کے راوی کا کذب کسی حدیث نبوی میں ثابت ہو گیا ہو۔
متروک: وہ جس کا راوی متہم بالکذب ہو۔
متفق علیہ: وہ حدیث ہے جسے امام بخاری اور امام مسلم نے اپنی صحیحین میں ایک  ہی صحابی سے روایت کیا ہو۔

 

                                                                                                     ہوم پیج