حقیقت ایمان

٭ ہر چیز کی علامت اسکی حقیقت کی غیر ہوتی ہے یہی حال ایمان کا ہے۔ ایمان کی علامت اور ہے اور حقیقت ایمان اور حقیقت ایمان کیا ہے۔۔۔۔؟
٭ حضور تاجدار مدنی جو کچھ اللہ تعالیٰ کی طرف سے لائے اسکی دل سے تصدیق کرنا (۱)اور حضور کی محبت(۲) کا نام ایمان ہے اور اس تصدیق اور محبت کا تعلق دل سے ہے۔ ایمان قلبی چیز ہے ظاہری اعضاء سے اسکا کوئی تعلق نہیں۔
٭ نماز روزہ حج زکوۃ وغیرہ یہ سب چیزیں ایمان کی علامت ہیں۔ حقیقت ایمان نہیں ہیں۔ انکا حقیقت ایمان سے کوئی تعلق نہیں۔ منافقین نماز روزہ حج زکوۃ وغیرہ عبادات بجالاتے تھے لیکن وہ مومن نہیں تھے کیونکہ انکے دل حقیقت ایمان سے خالی تھے۔ نہ وہ دل سے حضور کی تصدیق کرتے تھے اور نہ ہی ان کے دل میں حضور کی محبت تھی۔ معلوم ہوا کہ ظاہری عبادت ایمان نہیں ہے یہ سب چیزیں ایمان کی علامات تو ضرور ہیں لیکن حقیقت ایمان نہیں۔
٭ اس زمانے میں بہت سے لوگ حقیقت ایمان کو بالکل بھول گئے اور انہوں نے علامات ایمان کو حقیقت ایمان سمجھ لیا تمام باطل فرقے اسی غلط نظریے سے پیدا ہوئے اگر لوگ اس مسئلے کوصحیح طرح سمجھ جائیں تو پوری ملت اسلامیہ کے تمام اختلافات ختم ہوجائیں۔
٭ اگر نماز روزہ حج زکوۃ کو ہی حقیقت ایمان سمجھ لیاجائے تو پھر کوئی منافق بھی بے ایمان نہ رہے گا سب کو مومن ماننا پڑے گا اور اگر کوئی مومن کسی مجبوری کیوجہ سے کبھی ایک فرض ادا نہ کرسکے تو وہ کافر ہوجائے گا اور یہ دونوں نظریے قرآن و حدیث کے بالکل خلاف ہیں۔
٭ یہ بات روز روشن کی طرح واضح ہے کہ حقیقت ایمان اور چیز ہے اور علامت ایمان اور چیز اور کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کہ کسی چیز کی حقیقت تو موجود ہو لیکن علامت نہ ہو جیسے کسی مومن کا نہایت مجبوری کی حالت میں ظاہری عبادات نہ کرنا حقیقت ایمان کو باقی رکھتا ہے اور اس کے برعکس کسی کافر کا ظاہری نماز روزہ اسکو مومن نہیں بنا سکتا۔ اسلیے کہ علامت بغیر حقیقت کے بیکار ہوجاتی ہے۔ جو لوگ حقیقت ایمان سے محروم تھے انہوں نے اپنا کفر چھپانے کیلئے علامت ایمان کو ایمان قرار دیا اگر وہ ایسا نہ کریں تو لوگوں پر انکا بے ایمان ہونا ظاہر ہوجائے۔انکا ظاہری عبادات کو حقیقت ایمان سمجھنا باطل ہے یہ سب چیزیں ایمان کی علامات تو ہیں لیکن حقیقت ایمان نہیں۔ بس حق یہی ہے کہ حضور کی محبت اصل ایمان ہے روح ایمان ہے اور حقیقت ایمان ہے!

بمصطفیٰ برساں خویش را کہ دیں ہمہ اوست
اگر بہ اونر سیدی تمام بولہبی ست

وما علینا الا البلاغ
 

پچھلا صفحہ                             اگلا صفحہ

ہوم پیج