جامعہ اسلامیہ بہاولپور میں بطور شیخ الحدیث

٭ متفرق علوم و فنون میں دسترس کے ساتھ ساتھ علوم قرآن و حدیث میں جو ید طولی حاصل تھا وہ فضل ربی سوا تھا۔ جس کا اندازہ اس بات سے ہوسکتا ہے کہ محکمہ اوقات نے جامعہ اسلامیہ بہاولپور میں علوم شرعیہ میں تخصص اور تحقیق کیلئے مختلف شعبوں کا آغاز کیا تو شعبہ حدیث میں بلند پایہ محقق اور نابغہ روزگار ماہر حدیث کی ضرورت تھی جو بالخصوص روایت و درایت دونوں فنون میں مہارت تامہ رکھتا ہو تو اس عظیم منصب کیلئے محکمہ اوقات کی نظر انتخاب آپ پر پڑی۔مسلک اہلسنت کی نمائندگی کی خاطر نواب آف کالا باغ گورنر پنجاب نواب امیر محمد خان کے پر زور اصرار پر آپ نے اسے قبول فرمایا اور گیارہ سال تک اس منصب پر فائز رہے۔ اس دوران سنی طلباء کو بھی کئی سہولتیں میسر رہیں اور کئی اسامیوں پر سنی علماء کا تقرر بھی آپ کی خدمات کا مرہون منت ہے۔
 

ہوم پیج